سوئی ناردرن گیس پائپ لائنز لمیٹڈ
ہماری امید ... بہتر مستقبل ...

تعارف


قدرتی گیس

قدرتی گیس
 

Home Page Image قدرتی گیس جیساکہ نام سے ظاہر ہے قدرتی طور پر مختلف گہرائیوں اور جغرافیائی فارمیشنوں زیر زمین میں گیس کی شکل میں پائی جاتی ہے۔ یہ پاکستان میں سب سے زیادہ پائے جانے والے توانائی کے ذرائع میں سے ایک ہے اور کیونکہ یہ مقامی تیار کی جاتی ہے اس لیے اس کی قیمت یا فراہمی کی خارجہ رکاوٹ سے کوئی وابستگی نہیں۔ جب قدرتی گیس زمین سے نکا لی جاتی ہے تو بنیادی طور پر یہ میتھین پر مشتمل ہوتی ہے جو کہ بُو کے بغیر اور بے رنگ ہوتی ہے۔ نجاست ہٹا دینے کے بعد قدرتی گیس کو پائپ لائن کے نظام میں پیش کر دیا جاتا ہے جہاں سے یہ گیس صارفین تک بیھج دی جاتی ہے۔

تقسیم سے پہلے نقصان نہ پہنچانے والی گند گیس میں ڈال دی جاتی ہے تا کہ ایک غیر محفوظ صورت حال پیدا ہونے سے پہلے گیس کے اخراج کا اندازہ لگا لیا جائے۔ اس "سڑا ہوا انڈا" کی بدبو کےعلاوہ قدرتی گیس کے پاس کچھ حفاظتی خصوصیات بھی ہیں۔ یہ ہوا سے ہلکی ہونےکی وجہ سے اوپر اٹھتی ہے اور ماحول میں غائب ہو جاتی ہے۔ اور اس کے پاس ایک بہت ہی تنگ دہن حد ہوتی ہے،صرف 4سے14فیصد کی نسبت میں ہوا سے مل کے بھڑکتی ہے۔ اس حد میں زیادہ یا کم کوئی بھی مرکب اور قدرتی گیس کو جلایا نہیں جا سکتا۔ اس کو جلا نے سے پہلے اس کو حرارت کی بھی بہت زیادہ مقدار کی ضرورت ہوتی ہےجوکہ کم از کم 1200 ڈگری فارن ہائیٹ ہو۔

جلنے کے عمل میں آج قدرتی گیس صاف جلنے والے ایندھن میں سے ایک ہے۔ جب اس کو صیح طریقہ سے جلایا جاتا ہے تو اس میں سے صرف کاربن ڈائی آکسائیڈ(جب ہم سانس لیتے ہیں اور سانس چھورتے ہیں) اور آبی بخارات خارج ہوتےہیں۔ اس کی صاف جلنے کی خصوصیات کی وجہ سے بہت سے رہائشی علاقے، تجارتی اور صنعتی پروگرامزمیں ماحولیاتی ایندھن کے طور پر اس کا انتخاب کیا جاتا ہے۔ اس طرح کے پروگراموں میں : خلائی حرارتی، پانی گرم کرنے، باورچی خانے سے متعلق، اور آگ بجھانے والی گاڑیوں ایندھن کے طور پر، پاور پلانٹس، تجارتی اور صنعتی بوائیلرز، جیتا اچھا ہو سکے تجارتی طور پراور صنعتی پروسیسنگ کے لئے ایندھن کے طور پر شامل ہے۔

Updated: 29-10-2016